55

پشاور،جنرل قاسم سلیمانی کی شہادت کی پہلی برسی کے موقع پر خانہ فرہنگ پشاورمیں خصو صی تقریب کا انعقاد

خانہ فرہنگ اسلامی جمہوریہ ایران پشاورمیں ہفتے کے روز “شہدائے وحدت اسلامی” کے عنوان سے ایک کانفرنس کا انعقاد کیا گیا۔ جس میں مختلف مکتبہ فکرکی شخصیات اور اے پی ایس شہدا فورم کے وفد نے شرکت کی۔
سید ابراہیم دہنادی ایران کے ڈپٹی قونصل جنرل نے کہا کہ شہید سلیمانی کو داعش اور انتہا پسندی کے خلاف جنگ میں ان کی ہمت، وژن اور انوکھے کردار کے لئے یاد کیا جائے گا۔ جس دن ہر شخص خونخوار داعش کے چنگل سے عراقی اور شامی عوام کو بچانے سے مایوس ہو گیا تھا، تو یہ عظیم سردار خطے کے مظلوم عوام کی مدد اور دادرسی کیلئے پہنچ گیا۔ دشمن کے ساتھ مقابلہ میں شہید جنرل قاسم سلیمانی کی مقبولیت اور کامیابی اور دنیا کے عوام کے دلوں میں ان کا مقام ہمیشہ زندہ رہے گا۔ تقریب میں پشاور میں ایران کے ڈپٹی قونصل جنرل سید ابراھیم دہنادی نے بھی اظہار کیا اور شہید سلیمانی کی خدمات پر روشنی ڈالی اس موقع پرخانہ فرہنگ اسلامی جمہوریہ ایران پشاور کے ڈایریکٹرجنرل مہران اسکندریان نے شہادت کے فلسفے پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا اس ظلمانی اور تفرقہ انگیز دور میں قاسم سلیمانی اور ابو مہدی مہندس جیسے ستاروں نے وحدت اسلامی کے پرچم کو اپنے ہاتھوں سے بلند کیا تاکہ فتنہ پروروں کا مقابلہ کر سکیں ۔
ایم پی اے فضل الہی ، اسلامی نظریاتی کونسل کے چیئرمین ڈاکٹر قبلہ ایاز اور بقیہ مقررین نے شہید سلیمانی اور ابو مہدی مہندس کی اسلام کی سربلندی اور اسلامی وحدت کے لئے کئے گئے اقدامات پر روشنی ڈالی ۔
اس تقریب میں اے پی ایس فورم کے شہدا نے شرکت کی اور ایران کے سپریم لیڈر کے لئے ایک شمشیر کا تحفہ ایران کے ڈپٹی قونصل جنرل کے حوالے کیا۔
شہید قاسم سلیمانی کی پہلی برسی کی اس تقریب میں سیٹی یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر منہاج الحسن ، مولانا محمد شعیب، علامہ عابد شاکری، مجلس وحدت مسلیمین کے صوبائی صدر علامہ وحید کاظمی اور ہندو اور مسیحی اقلیتوں کے نمائندوں نے بھی شرکت کی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں